تریپورہ گورنر نے کہا جلد ہی ہندوؤں کے چتا جلانے پر بھی لگ سکتی ہے روک

تریپورہ گورنر نے کہا جلد ہی ہندوؤں کے چتا جلانے پر بھی لگ سکتی ہے روک

اپنے ٹویٹس کی وجہ سے چرچا میں رہنے والے تریپورہ کے گورنر تتھاگت رائے کے ایک تازہ ٹویٹ سے ایک بار پھر سوشل میڈیا پر بھونچال آ گیا ہے۔ انہوں نے دہلی۔ این سی آر میں سپریم کورٹ کی طرف سے عائد پٹاخوں کی فروخت پر پابندی کے بعد کہا کہ جلد ہی ہندوؤں کی آخری رسوم پر بھی روک لگ سکتی ہے۔سپریم کورٹ کے فیصلے پر غور کرتے ہوئے انہیں اس میں ایک فرقہ وارانہ سازش کی بو بھی نظر آئی جو ایک کے بعد ایک ہندو رسومات کو نشانہ بنا رہی ہے۔ منگل کو انہوں نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا، 'کبھی دہی ہانڈی، آج پٹاخہ، کل کو ہو سکتا ہے آلودگی کا حوالہ دے کر موم بتی اور ایوارڈ واپسی گینگ ہندوؤں کی چتا جلانے پر بھی عرضی ڈال دے۔رائے نے کہا کہ ایک ہندو کے طور پر پٹاخوں پر عائد پابندی سے دکھ ہوتا ہے۔ لیکن انہوں نے اپنے ٹویٹس کا دفاع کیا اور کہا، 'میں نے اپنے آئینی سرحدوں کو عبور نہیں کیا ہے۔ میں اپنی رائے رکھنے کا حقدار ہوں۔دہلی کی آب وہوا کی تشویش کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ وہ دارالحکومت کی حالت سے واقف ہیں۔ ساتھ ہی یہ دلیل بھی دی کہ دیوالی صرف سال میں ایک بار آتی ہے۔