سری دیوی کی موت بنی مسٹری،48 گھنٹے میں تین مرتبہ بدلی مرنے وجہ

سری دیوی کی موت بنی مسٹری،48 گھنٹے میں تین مرتبہ بدلی مرنے وجہ

سری دیوی کی موت کو لیکر فارنسک رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہیکہ اداکارہ کی موت ایک حادثہ کی شکل باتھ ٹب میں دوبنے سے ہوئی ہے۔حالانکہ ابھی بھی خبریں ہیں کہ دبئی پولیس فارنسک رپورٹ سے اتفاق نہیں رکھتی ہے،لیکن اس نتیجے تک پہنچنے سے پہلے بھی ممتاز اداکارہ کی موت میں کئی موڑ آئے ۔گزشتی دو دنوں میں ایک کے  بعد ایک کئی نئے خلاصے ہوتے رہے۔پل۔پل بدلتی رہی تھیوری آئے ڈالتے ہیں ایک نظر۔۔۔۔واضح ہو کہ 24 فروری کی رات دبئی سے خبر آئی کہ سونم  کپور کے بھائی کی شادی میں شرکت کرنے پہنچی دلکش اداکارہ سری دیوی کی موت ہو گئی ہے۔ان کی اچانک موت کی خبر سن کر ملک بھر میں لوگ سکتے میں تھے اور ہر کوئی ان کی موت کی وجہ جاننا چاہتا تھا۔کہ آخر وہ اچانک دنیا کو الوداع کیسے کہہ گئیں؟وجہ بتائی گئی کہ ان کو دل کا دورہ پڑنے سے موت واقع ہوئی۔سری دیوی کو دل کا دوراپڑنے کی خبر 25 فروری کی صبح تک پھیل چکی تھی۔جب تک ان کے چاہنے والے اس پر یقین کر ہی رہے تھے کہ ان کی موت نے ایک نیا موڑ اختیار کر لیا اور اس بار موت کی وجہ بدل گئی۔بتادیں کہ 25 فروری کی دوپہر بعد خبریں آنے لگیں کہ ان کو یہ دل کا دورا دواؤں کے اوور ڈوز سے ہوا ہے۔ان کے بارے میں کہا جا رہا تھا کہ سری دیوی جوان نظر آنے کیلئے کچھ دوائیں اور لپ سرجری کے بعد جو دوائیں لے رہی تھیں انہیں دواؤں کا غلط اثر ہونے سے دل کا دورا پڑا ہے۔حالانکہ ڈاکٹروں نے ان دواؤں سے دل کا دورا پڑنے سے انکار کر دیا تھا۔ وہیں ان کے اہل خانہ کے  ممبر سنجے کپور نے بھی انہیں دل کی کسی بھی بیماری کے بارے میں انکار کیا تھا۔جب تک فینس اپنی پسندیدہ اداکارہ کی موت کی اس وجہ پر یقین کر پاتے تب تک خبروں نے اپنا رخ ایک نئے انداز میں پھر بدل لیا۔اب سامنے آ رہا تھا کہ بونی کپور اپنی اہلیہ سری دیوی کو سرپرائز دینے کیلئے ڈنر ڈیٹ پر لے جانا چاہتے تھے۔دراصل سری دیوی کی موت کے پہلے بونی کپور نے پلان بنایا تھ اکہ وہ سری دیوی کے ساتھ باہر جائیں گے۔ہوٹل اسٹاف کے مطابق وہ بیحد خوش بھی نظر آئی تھیں۔اس کے بعد وہ تیار ہونے کیلئے اپنے کمرے میں چلی گئیں۔ 15 منٹ بعد تک جب وہ باہر نہیں آئیں تو بونی کپور نے باتھ روم کا دروازہ کھٹکھٹایا۔جب دروازے نہیں کھلا اور کوئی حرکت باتھ روم سے نہیں سنائی دی تو  انہوں نے دروازہ توڑکر دیکھا تو سری دیوی باتھ روم میں بے سدھ باتھ ٹب میں ملیں۔اس کے بعد یہ بات سامنے آئی کہ وہ دو دنوں تک اپنے کمرے سے باہر نہیں نکلی تھیں۔اس کے بعد فارنسک ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے سری دیوی کی جو پوسٹ مارٹم رپورٹ سونپی گئی ہے اس کے مطابق سری دیوی کے شریر میں شراب کی مقدار بھی پائی گئی ہے۔ملی جانکاری کے مطابق شراب کے اثر سے سری دیوی کا توزن بگڑ گیا جس کی وجہ سے وہ ٹب میں گر گئیں اور ڈوبنے سے موت ہو گئی۔حالانکہ اس تھیوری پر بھی سوال اٹھ رہے ہیں۔