اگر اجودھیا میں رام مندر نہیں بنتا ہے تو ہماری تہذیب کی جڑ کٹ جائے گی : موہن بھاگوت

اگر اجودھیا میں رام مندر نہیں بنتا ہے تو ہماری تہذیب کی جڑ کٹ جائے گی : موہن بھاگوت

راشٹریہ سویم سیوک کے سربراہ موہن بھاگوت نے کہا ہے کہ ہندوستان میں مسلم برادری نے نہیں بلکہ غیر ملکی طاقتوں نے اجودھیا کی رام مندر کو منہدم کیا تھا۔ بھاگوت نے تھانے ضلع میں وراٹ ہندو سمیلن سے کل خطاب کرتے ہوئے کہا ’’ ہندوستان میں مسلم برادری نے رام مندر کو منہدم نہیں کیا تھا۔ ہندوستانی شہری اس طرح کا کام کرہی نہیں سکتے۔ غیرملکی طاقتوں نے یہاں مندروں کو تباہ کیا تاکہ ہندوستانیوں کا حوصلہ پست کرسکیں‘‘۔ بھاگوت نے اس بات پر زور دیا کہ رام مندر کوبحال کرنا قوم کی ذمہ داری ہے۔ ’’ رام مندر کو ان لوگوں نے منہدم کیا جو غیر ملکی تھے۔ یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم ملک کے اندر تباہ کئے گئے اس مندر کو بحال کریں۔ مندر کو وہیں تعمیر کیا جانا چاہئے جہاں یہ اصل میں واقعتھا۔ ہم اس کے لئے لڑنے کے لئے تیار ہیں‘‘۔انہوں نے مزید کہا ’’ اگر اجودھیا میں رام مندر نہیں بنتا ہے تو ہماری تہذیب کی جڑ کٹ جائے گی۔ اس میں کوئی شبہ نہیں کہ مندر وہیں بنے گا جہاں وہ واقع تھا۔آر ایس ایس سربراہ نے کہا کہ ’’ آج ہم آزاد ہیں۔ ہمیں ان تما م چیزوں کو دوبار تعمیر کرنے کا حق ہے جنہیں تباہ کیا گیا تھا یہ صرف مندر نہیں تھے بلکہ ہماری شناخت کی علامتیں ہیں۔