مولانا سید ارشدمدنی: ملک کے اتحاد وسالمیت کے لئے تمام مظلوم طبقات کا متحد ہونا ضروری

مولانا سید ارشدمدنی: ملک کے اتحاد وسالمیت کے لئے تمام مظلوم طبقات کا متحد ہونا ضروری

جمعیۃعلماء ہند کی مجلس عاملہ کا اجلاس مرکزی دفترمفتی کفایت اللہ میٹنگ ہال ۱بہادرشاہ ظفرمارگ نئی دہلی میں صدرمولانا سید ارشدمدنی کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ملک کے موجودہ حالات اور دوسرے اہم مسائل پر غور خوض ہوا اور ان پر مجلس عاملہ کے ممبران نے کھل کر اپنی رائے اور احساسات کا اظہار کیا ، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا سید ارشدمدنی صدرجمعیۃعلماء ہند نے ملک کے موجودہ حالات پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حالات ملک کے تقسیم کے وقت سے بھی بدتر اور خطرناک ہوچکے ہیں آئین وقوانین کی بالادستی کو ختم کرنے کی سازش ہورہی ہے ۔مکہ مسجد دھماکہ کے معاملہ میں ملزمین کی رہائی پر انہوں نے کہا کہ اس کا اشارہ تو اس  وقت  ہی مل گیا تھا جب مالیگاؤں بم دھماکہ کے مقدمہ میں سرکاری وکیل کی حیثیت سے پیروی کرنے والی ایک انصاف پسند خاتون وکیل روہنی سالیان نے یہ کہہ کر اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا تھا کہ این ،آئی، اے معاملہ کو کمزورکرنے کے لئے ان پر دباؤ ڈال رہی ہے ۔مولانا مدنی نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ جب ملک کے اتحاد سالمیت اور یکجہتی کے لئے تمام مظلوم طبقات متحد ہوجائیں کیونکہ اب اسی صورت ملک کو تباہی سے بچایا جاسکتا ہے انہوں نے ایک بارپھر وضاحت کی کہ وہ نہ تو کسی خاص پارٹی کے حامی ہیں اورنہ مخالف بلکہ انہیں صرف اور صرف ملک کا اتحاد اس کی تہذیبی روایت ، یکجہتی اور سالمیت ہی عزیز ہے۔