ترنمول کانگریس نے سلطان احمد کی اہلیہ ساجدہ احمد کو الوبیڑیا سے بنایا امیدوار: پارلیمانی ضمنی الیکشن

ترنمول کانگریس نے سلطان احمد کی اہلیہ ساجدہ احمد کو الوبیڑیا سے بنایا امیدوار: پارلیمانی ضمنی الیکشن

الوبیڑیا پارلیمانی حلقے سے ضمنی انتخاب کیلئے ترنمول کانگریس نے سابق مرکزی وزیر و ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کی اہلیہ ساجدہ احمد کوا میدوار بنانے کا فیصلہ کیا ہے ۔4ستمبر کو سلطان احمد کے انتقال کی وجہ سے یہ سیٹ خالی ہوگئی تھی ۔ 55سالہ ساجدہ احمد گرچہ پہلی مرتبہ سیاست میں اپنی قسمت آزمائی کررہی ہیں تاہم وہ سماجی اور ملی کاموں میں اپنے شوہر سلطان احمد کے ساتھ سرگرم رہی ہیں۔اسلامیہ اسپتال کی نرسنگ اسکول کی کنوینرکی حیثیت سے کئی سالوں سے کام کررہی ہیں ۔اس کے علاوہ کلکتہ کے تاریخی ادارہ یتیم خانہ اسلامیہ کی لائف ٹائم ممبر ہیں ۔اس کے علاوہ مدرسۃ الصبایا کی سیکریٹری رہ چکی ہے اور دس سال قبل تک ایک پرائیوٹ اسکول کی پرنسپل رہ چکی ہے۔رانی برلا کالج سے گریجویشن تک کی تعلیم مکمل کرنے ساجدہ احمدنے یواین آئی کو بتایا کہ وہ اپنے مرحوم شوہر سلطان احمد کے ادھورے کاموں کو مکمل کرنے کی کوشش کریں گی اور انہیں خوشی ہے کہ پارٹی نے انہیں امیدوار بنایا ہے اور مجھے امید ہے کہ ممتا بنرجی کے کاموں اور اپنے شوہر کی مقبولیت کی وجہ سے آسانی سے جیت درج کراؤں گی۔ساجدہ احمد نے کہا کہ انتخاب جیتنے کے بعد لڑکیوں کی تعلیم پر توجہ دیں گے ۔خیا ل رہے کہ سابق مرکزی وزیر سلطان احمد الوبیڑیا پارلیمانی حلقے سے 2009اور 2014کے لوک سبھا انتخابات میں کامیابی حاصل کی تھی ۔سلطان احمد سیاست کے ساتھ ملی حلقوں میں مقبول تھے اور وہ آل انڈیا مسلم پرسنل لابورڈ سمیت کلکتہ کے بیشتر مسلم ادارے اسلامیہ اسپتال، یتیم خانہ اسلامیہ، مسلم انسٹی ٹیوٹ، انجمن مفیدالاسلام جیسے تاریخی و قدم ادارے کے صدر تھے ۔