بی جے پی کی 59 امیدواروں کی تیسری فہرست میں بھی کوئی مسلمان نہیں: کرناٹک اسمبلی انتخابات

بی جے پی کی 59 امیدواروں کی تیسری فہرست میں بھی کوئی مسلمان نہیں: کرناٹک اسمبلی انتخابات

بی جے پی نے کرناٹک اسمبلی الیکشن کے لئے امیدواروں کی تیسری فہرست جاری کردی ہے۔ اس فہرست میں بھی یدی یورپا کے بیٹے بیوائے راگھویندر کانام شامل نہیں کیاگیاہے۔ ساتھ ہی کسی مسلم کو بھی امیدوار نہیں بنایاگیاہے۔ بی جے پی کی تیسری فہرست میں 60امیدوار شامل ہیں، اس میں 59نئے امیدوار ہیں جبکہ ایک امیدوار کو تبدیل کیا گیا ہے۔ کولار گولڈ فیلڈ (محفوظ) سیٹ سے اب ایس اشونی کو امیدوار بنایا گیاہے۔  بی جے پی کی تیسری فہرست میں بھی کسی مسلم امیدوار کو ٹکٹ نہیں دیا گیاہے۔اس سے قبل جاری کی گئی دوسری فہرست میں  بی جے پی نے کرناٹک اسمبلی انتخابات کے لئے اپنے 82امیدواروں کی فہرست جاری کی تھی۔ یہ فہرست ثابت کرتا ہے کہ پارٹی کے وزیراعلیی عہدہ کے امیدوار بی ایس یدی یورپا کی پارٹی میں ابھی بھی مضبوط پوزیشن ہے کیونکہ وہ اپنے بیشتر وفاداروں کو ٹکٹ دلانے میں کامیاب رہے ہیں۔دوسری فہرست میں تقریباً 32 امیدوار لنگایت کمیونٹی سے ہیں۔ وہیں ووکّکلیگا طبقے سے 10 جبکہ دیگر پسماندہ طبقات (اوبی سی) سے تعلق رکھنے والے 20امیدواروں کوٹکٹ دیا گیاہے۔ یہاں غور کرنے والی ایک بات یہ ہے کہ بی جے پی کی پہلی اور دوسری فہرست مین ایک بھی مسلم یا عیسائی امیدوار نہیں ہے۔ عیسائی یا مسلمانوں کو ٹکٹ نہیں دینے سےایسا محسوس ہوتا ہے کہ پارٹی اترپردیش کی ہی حکمت عملی کو پھر سے دوہرا رہی ہے۔اس الیکشن میں کافی داغی امیدواروں کو اتارا گیا ہے۔ جب برسراقتدار کانگریس نے 218 امیدواروں کی لسٹ جاری کی اور پورا زور اس بات پر رکھا کہ کیسے الیکشن جیتا جائے تو بی جے پی نے بھی ایک بار پھر مافیائوں کو ٹکٹ دینے میں کوئی جھجھک محسوس نہیں کی۔