میجر آدتیہ کے خلاف کارروائی پر سپریم کورٹ نے لگائی روک ، محبوبہ سرکار سے جواب طلب: شوپیاں فائرنگ

میجر آدتیہ کے خلاف کارروائی پر سپریم کورٹ نے لگائی روک ، محبوبہ سرکار سے جواب طلب: شوپیاں فائرنگ

جموں و کشمیر کے شوپیاں میں گزشتہ ماہ فوج کی فائرنگ میں دو لوگوں کی موت کے معاملہ میں میجر آدتیہ کمار کے خلاف کارروائی پر سپریم کورٹ نے عبوری روک لگادی ہے۔ کورٹ نے اس معاملہ میں جموں وکشمیر حکومت اور اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرکے دو ہفتوں میں جواب بھی طلب کیا ہے۔میجر آدتیہ کے والد ریٹائرڈ لیفٹیننٹ کرنل کرم ویر سنگھ کی جانب سے داخل کی گئی ایک عرضی پر سماعت کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے میجر آدتیہ اور دیگر فوجی اہلکاروں کے خلاف درج ایف آئی آر میں آگے کی کارروائی پر روک لگادی ہے۔خیال رہے کہ 27 جنوری کو شوپیاں میں پتھراو کرتی بھیڑ پر فائرنگ کرنے کے دوران دو کشمیری شہریوں کی موت ہوگئی تھی ، جس کے بعد جموں و کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے اس معاملہ میں جانچ کرنے اور پولیس کارروائی کی ہدایت دی تھی ، جس پر میجر آدتیہ کے خلاف ریاستی پولیس نے کیس درج کرلیا تھا ۔ ریاستی حکومت کے اسی حکم کے خلاف میجر آدتیہ کے والد نے سپریم کورٹ کا دروزہ کھٹکھٹایا ہے۔