شاملی کے شوگر مل میں بائیو گیس پلانٹ سے گیس رسنے سے سینکڑوں بچے ہوئے بیہوش

شاملی کے شوگر مل میں بائیو گیس پلانٹ سے گیس رسنے سے سینکڑوں بچے ہوئے بیہوش

اترپردیش میں شاملی کے صدر کوتوالی علاقے میں شوگر مل کے گیس پلانٹ سے گیس کے رسنے کی وجہ سے سرسوتی ششو ودیا مندر جونیئر ہائی ا سکول کے سینکڑوں بچے بیہوش ہوگئے۔ ایڈیشنل ضلع مجسٹریٹ شیو بہادر سنگھ کے مطابق میرٹھ-کرنال راستے پر واقع سر شادی لال شوگر مل کے گیس پلانٹ سے نکلنے والے ویسٹ لکویڈ کیمیکل سے بنی گیس کےپھیلاؤ کیوجہ سے لوگوں کو سانس لینے میں پریشانی ہونے لگی اور وہاں واقع سرسوتی ششو ودیا مندر جونیئر ہائی ا سکول کے کئی بچے بیہوش ہوگئے جنہیں ضلع اسپتال میں داخل کرا دیا گیا ہے۔شوگر مل کے چیف سیکورٹی انچارج آر کے گپتا کا کہنا ہے کہ پلانٹ سے نکلنے والے ویسٹ کیمیکل کی گیس سے اسکول کے بچوں کے متاثر ہونے کا الزام غلط ہے کیونکہ پلانٹ کے قریب ایک اور کوشامبی اسکول واقع ہے اس میں پڑھنے والے بچے گیس سے متاثر نہیں ہوئے، جبکہ اسکول پرنسپل امیش کمار کا الزام ہے کہ پلانٹ سے نکلنے والی گیس سے ہی اسکول کے تقریبا 200 بچے بیہوش ہوئے ہیں۔ ایڈیشنل ضلع مجسٹریٹ خزانہ شیو بہادر سنگھ نے اس معاملے کی جانچ کا حکم دیا ہے۔