سہارا نے شروع کیا ایک اسکول، جسمانی و ذہنی طور پر معذور بچوں کی تربیت کے لئے

سہارا نے شروع کیا ایک اسکول، جسمانی و ذہنی طور پر معذور بچوں کی تربیت کے لئے

سماجی ماہرین کا کہنا ہے کہ معذوروں کو صرف رحم کی نظر سے دیکھنے کے بجائے انھیں اپنے پاؤں پر کھڑے رہنا سکھانا بھی ایک بڑا کار خیر ہے۔ اب جسمانی و ذہنی معذور بچوں کی دیکھ بھال کے لئے گلبرگہ میں سہارا نامی ایک تنظیم  سامنے آئی ہے۔ سہارا این جی او نے جسمانی و ذہنی معذور بچوں کے لئے ڈے کیئر اسکول شروع کیا ہے۔ جس میں معذور بچوں کی صلاحیتوں کو ابھارنے کی کوشش کی جائیگی۔بچہ جب پیدائشی معذورہوتو اس کا کرب کتنا شدید ہوتا ہے۔ اس کا اندازہ آپ ان والدین کو دیکھ کر لگا سکتے ہیں۔ والدین بھی اگر  معاشی طور پر کمزور ہوں تو رہی سہی کمربھی  ٹوٹ ہی جاتی ہے۔ اپنے معذور بچوں کی پرورش اورانکی نشوو نما کے بارے میں سوچ سوچ کر ہی ایسے والدین پریشان ہو جاتے ہیں۔ مثال کے طور پر شائستہ بیگم کو لے لیجئے  تو ان کے دونوں بچے معذور ہیں۔ ایسے ہی والدین اوربچوں کی تربیت کے لئے سہارا ڈے کئیر اسکول کا افتتاح عمل میں آیا ہے ۔ اس اسکول میں معذور بچوں کے ساتھ ساتھ انکے والدین کو بھی ٹریننگ دی جائیگی۔ ساتھ ہی والدین کو سرکاری اسکیمات سے بھی واقف کرایا جائیگا۔