کانگریس: بیرون ملک جاکر ہندوستان کو بدنام کرنا وزیر اعظم کو زیب نہیں دیتا ہے

کانگریس: بیرون ملک جاکر ہندوستان کو بدنام کرنا وزیر اعظم کو زیب نہیں دیتا ہے

کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے سابقہ حکومتوں کی نکتہ چینی کرکے بیرونی ملکوں میں ایک بار پھر ہندوستان کو بدنام کیا ہے اور اپنی حکومت کی کارگزاریوں کو اس طرح سے پیش کیا ہے گویاان کے آنے کے بعد ہی ملک میں ترقی ہوئی ہے۔کانگریس کے سینئر ترجمان آنند شرما نے یہاں پارٹی کی معمول کی بریفنگ میں کہا کہ سابقہ حکومتوں کو بیرون ملک جاکر بدنام کرنا وزیر اعظم کو زیب نہیں دیتا ہے لیکن مسٹر مودی نے اس کی پرواہ کئے بغیر بیرونی ملکوں میں وزیر اعظم کے وقار کو نقصان پہنچایا ہے۔ مودی نے مسقط میں ہندوستانی برادری کے لوگوں کے درمیان کل اپنی حکومت کے کام کاج کی جم کر تعریف کی اور ایسا ظاہر کیا گویا ملک نے جو ترقی کی ہے وہ ان کی حکومت بننے کے بعد ہی ممکن ہوسکی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے اپنی حکومت کے کام کاج کی تعریف کی ہے لیکن سابقہ حکومتوں کی نکتہ چینی کرکے انہوں نے ملک کی توہین کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے جیسے وعدوں کو پورا کرنے میں ناکام رہی ہے اور اب اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے وہ پرانی حکومتوں کو بدنام کرکے ملک کے عوام کو گمراہ کررہے ہیں۔ترجمان نے الزام لگایا کہ  مودی اپنے بیرونی ملکوں کے دورے میں سرکاری مشنری کا استعمال کرتے ہیں۔ حکومت  مودی کے ان پروگراموں کے انعقاد میں ملک کا پیسہ برباد کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسقط میں بھی یہی ہوا ہے ۔ ہندوستانی سفارت خانہ نے مسقط میں کام کرنے والی ہندوستانی کمپنیوں کو خط لکھ کر اپنے ملازمین کو وزیر اعظم کے پروگرام میں شامل ہونے کے لئے بھیجنے کو کہا تھا۔ انہوں نے اس کی نقل بھی صحافیوں کو فراہم کرائی اور کہا کہ خط کی تفصیلات کسی کو نہیں بتانے کی ہدایت دی گئی تھی۔