گھوٹالہ کرکے فرار ہوجانے والوں کیلئے بنے گا الگ قانون ، کابینہ نے دی منظوری

گھوٹالہ کرکے فرار ہوجانے والوں کیلئے بنے گا الگ قانون ، کابینہ نے دی منظوری

ملک میں 100کروڑ روپے یا اس سے زائد کا اقتصادی جرائم کرکے فرار ہوجانے والے ملزمین کی پوری املاک ضبط کرنے سے متعلق قانون بنانے کو حکومت نے منظوری دے دی ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی کی صدارت میں ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں اس سلسلہ کے بل کو منظور ی دی گئی۔ وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ 2017-18 کے بجٹ میں اس طرح کا قانون بنائے جانے کا ذکر کیا گیا تھا۔انہوں نے کہاکہ اکنامک آفینڈرس بل ۔2018کو منظوری دی گئی ہے۔ بجٹ اجلاس کے پانچ مارچ کو شروع ہورہے دوسرے مرحلہ میں اس بل کو پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا ۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ کوئی بھی سیاسی جماعت اس طرح کے مجرموں کے ساتھ ہمدردی نہیں کرنا چاہے گی۔وزیرخزانہ ارون جیٹلی نے کہاکہ اس طرح کے معاملہ میں عدالت سے گرفتاری وارنٹ جاری ہونے پر ملزم کو ’مفرور‘ سمجھا جائے گا اور اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ا س بل میں اس طرح کے مجرموں کی بے نامی سمیت تما م املاک کو ضبط کرنے کا التزام کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی غیرممالک کی املاک کو بھی ضبط کرنے کے لئے بین الاقوامی سطح پر اس قانون کے تحت دوسرے ممالک کے ساتھ کام کیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی مجرم ملک میں سول دعوی بھی نہیں کرسکے گا۔خیال رہے کہ شراب کے کاروباری وجے مالیا کے بنکوں کا نو ہزار کروڑ روپے سے زائد کا بقایہ لیکر فرار ہونے کے بعد اس طرح کے قانون کی ضرورت محسوس کی جارہی تھی۔ حال ہی میں پنجاب نیشنل بنک میں تقریباََ 13ہزار کروڑ روپے کا گھپلہ کرکے ارب پتی زیورات کا ڈیزائنر نیرو مودی اور ہیرا کاروبارری میہول چوکسی ملک سے فرار ہوچکے ہیں۔