امت شاہ سے گفتگو کے بعد نتن پٹیل کی ناراضگی ہوئی ختم

امت شاہ سے گفتگو کے بعد نتن پٹیل کی ناراضگی ہوئی ختم

 

احمد آباد: گجرات میں محکموں کے الاٹمنٹ پر ناراض نائب وزیر اعلی نتن پٹیل گزشتہ دو دنوں سے جاری 'ہائی وولٹج سیاسی ڈرامہ کے بعد آج آخر کار مان گئے اور کہا کہ اعلی کمان نے ان کے احساسات کو سمجھا ہے جس کے سبب وہ آج سے ذمہ داری سنبھالیں گے۔ گذشتہ 26 دسمبر کو وزیر اعلی وجے روپاني کے ساتھ حلف لینے کے بعد 28 دسمبر کی رات ایک اور ہائی وولٹج ڈرامہ کے درمیان محکموں کی تقسیم میں ان سے خزانہ، شہری ترقیات اور شہری رہائش اور پٹرو کیمیکل محکمہ لے لیے جانے کے سبب انہوں نے دو دنوں تک عہدہ نہیں سنبھالتے ہوئے باغیانہ تیور اپنا رکھا تھا۔ وہ سرکاری گاڑی بھی استعمال نہیں کر رہے تھے اور راجدھانی گاندھی نگر کے بجائے احمد آبادمیں تھلتیج واقع اپنی رہائشگاہ میں رہ رہے تھے۔

مسٹر پٹیل نے آج صبح یہاں اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس میں کہا کہ بی جے پی صدر امت شاہ اور پارٹی کے سینئر لیڈر رام لال، وی ستيش سمیت دیگر لوگوں سے ان کی بات چیت ہوئی۔ وہ ناراض نہیں تھے بلکہ نائب وزیر اعلی اور حکومت میں نمبر دو ہونے کے سبب انہیں زیب دیں، ایسے محکمہ چاہتے تھے۔یہ بات انہوں نے مسٹر شاہ اور دیگر رہنماؤں کو بتائی اور قیادت نے ان کی احساس و جذبات کا لحاظ کیا ہے۔ مسٹر شاہ نے انہیں فون کرکے عہدہ سنبھالنے کو کہا ہے۔ وزیر اعلی وجے روپاني آج دوپہر دو بجے تک گورنر کو انہیں کچھ سیکشن مزید سونپنے کے لئے خط دیں گے۔ انہیں یہ پتہ نہیں کہ یہ کون سا محکمہ ہوگا۔لیکن انہیں پارٹی قیادت پر مکمل اعتماد ہے۔