بورڈ کے بھوپال اجلاس سے مسلمانوں کو شدید مایوسی ہوئی ہے: شاہی امام سید احمد بخاری

بورڈ کے بھوپال اجلاس سے مسلمانوں کو شدید مایوسی ہوئی ہے: شاہی امام سید احمد بخاری

 شاہی امام مولانا سید احمد بخاری نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی پر آل انڈیامسلم پرسنل لا بورڈ کی سرد مہری کو مجرمانہ خاموشی قرار دیتے ہوئے کہا کہ بورڈ کے بھوپال اجلاس سے مسلمانوں کو شدید مایوسی ہوئی ہے۔ مولانا بخاری نے آج یہاں جاری ایک بیان میں بھوپال میں منعقدہ آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کی مجلس عاملہ کے اجلاس کی کارروائی پر نکتہ چینی کی ہے اور کہا ہے کہ بورڈ نے میانمارکے مسلمانوں کی سفاکانہ نسل کشی پر مجرمانہ خاموشی اختیار کرکے ملت کے ایک سنگین مسئلے کے تعلق سے اپنی سردمہری اور لاتعلقی کا مظاہرہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ اس نے طلاق ثلاثہ جیسے سنجیدہ مسئلے پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر بھی اپنی غیر سنجیدگی ظاہر کی ہے۔امام بخاری نے کہا کہ بورڈ کا اجلاس ایسے وقت منعقد ہوا جب میانمارمیں مسلمانوں پر توڑے جانے والے بھیانک مظالم اور لاکھوں کی تعداد میں ان کے انخلاء پر پوری دنیا کے مسلمان شدید اضطراب میں مبتلا ہیں اور وہ اس بہیمانہ نسلی تطہیر کے خلاف اپنی سخت ناراضگی کا اظہار کر رہے ہیں۔