وادی کشمیر کی تمام مذہبی جماعتوں نے برما میں روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام کرنے پر شدید ردعمل کا اظہار

وادی کشمیر کی تمام مذہبی جماعتوں نے برما میں روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام کرنے پر شدید ردعمل کا اظہار

۔ وادی کشمیر کی تمام مذہبی جماعتوں نے برما میں روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام اور سینکڑوں مسلمان بستیوں کو مسمار و خاکستر کردینے پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس ننگی بربریت اور جارحیت پر عالمی برادری خصوصاً عالم اسلام کی خاموشی کو حد درجہ افسوسناک ، شرمناک اور مجرمانہ قرار دیا ہے۔ انہوں نے 8 ستمبر جمعتہ المبارک کو روہنگیائی مسلمانوں کے ساتھ یوم یکجہتی کے طور پر منانے کا اعلان کیا ہے۔ متحدہ مجلس علماء جموں وکشمیر اور اس سے منسلک مذہبی جماعتوں بشمول جماعت اسلامی جموں وکشمیر ، جمعیت اہلحدیث جموں وکشمیر ، جموں وکشمیر انجمن شرعی شیعان، اسلامک اسٹیڈی سرکل،اتحاد المسلمین جموں وکشمیر، دارالعلوم رحیمہ بانڈی پورہ،انجمن تبلیغ الاسلام، انجمن حمایت الاسلام،مفتی اعظم جموں وکشمیر، مسلم پرسنل لاء بورڈ جموں و کشمیر، دارالعلوم بلالیہ، دارالعلوم قاسمیہ، انجمن نصرۃ الاسلام،انجمن مظہر الحق بیروہ، درالعلوم نور الاسلام ترال، پیروان ولایت جموں وکشمیر، اہلبیت فاؤنڈیشن اور انجمن علمائے احناف نے منگل کو یہاں جاری ایک مشترکہ بیان میں برما کے روہنگیائی مسلمانوں پر ہونے والے مظام کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔ ان مذہبی جماعتوں کے سرپرستوں بالخصوص میرواعظ مولوی عمر فاروق نے کہا کہ برمی مسلمانوں کو جس بے دردی کے ستاتھ تہہ تیغ کیا جارہا ہے اور بستیوں کی بستیاں راکھ کے ڈھیر میں تبدیل کی جارہی ہیں۔ عورتوں کی عزت و عصمت کے ساتھ کھلواڑ کیا جارہا ہے اس ضمن میں عالم اسلام اور مسلمان ممالک کی حکومتوں کی خاموشی حد درجہ مجرمانہ ہے اور ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔