غیر مجاز ایجنسیوں اورویب سائٹوں کے خلاف یو آئی ڈی اے آئی کا ناقابل برداشت رویہ 

غیر مجاز ایجنسیوں اورویب سائٹوں کے خلاف یو آئی ڈی اے آئی کا ناقابل برداشت رویہ 

نئی دہلی، منفرد شناخت کے لئے ہندستانی اتھارٹی (یو آئی ڈی اے آئی) نے منفرد شناختی نمبر آدھار کارڈ جاری کرنے کے لئے غیر قانونی طور پر خدمات فراہم کرنے اور لوگوں سے زیادہ رقم وصول کرنے پر غیر مجاز ایجنسیوں ، ویب سائٹوں اور موبائیل اپلی کیشن کے خلاف بالکل برداشت نہ کرنے کا رویہ اپنایا ہوا ہے۔ یو آئی ڈی اے آئی نے اب تک ایسے 12 ویب سائٹوں کو بند کردیا ہے۔ جبکہ گوگل پلے اسٹور میں دستیاب 12 موبائل ا پلی کیشن کو بھی بند کردیا ہے۔ علاوہ ازیں یو آئی ڈی اے آئی نے مزید 26 غیر قانونی اور دھوکہ دھڑی کرنے والی ویب سائٹوں اور اپلی کیشنوں کو بھی بند کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں۔

منفرد شناخت کےلئے ہندستانی اتھارٹی (یو آئی ڈی اے آئی) کے علم میں یہ بات آئی تھی کہ گوگل پلے اسٹور کے ذریعہ ڈاون لوڈ کئے جانے والے کچھ جعلی اور دھوکہ کرنے والے ویب سائٹوں اور موبائل اپلی کیشن پر غیر قانونی طور پر ا ٓدھار کا رڈ بننے سےمتعلق خدمات فراہم کی جارہی ہے۔ ان ویب سائٹوں پر آن لائن آدھار کارڈ ڈاؤن لوڈ کرنےکا عمل، آ دھار کارڈ بننے کی جانکاری اور دیگر خدمات مہیا کرانے کا کھیل جاری تھا۔ اس طرح عام شہریوں سے غیر قانونی طور پر آدھار نمبر اور اندراج کی تفصیلات جمع کیا جارہا تھا۔

یو آئی ڈی اے آئی کے سی ای او ڈاکٹر اجےبھوشن پانڈے نے کہا کہ یو آئی ڈی اے آئی نے ان ویب سائٹوں اور موبائل اپلی کیشن کے مالکان کو اپنی مرضی سے آدھار کارڈ سے متعلق خدمات فراہم کرنے کا اختیار نہیں دیا ہے۔

یو آئی ڈی اے آئی عام شہریوں کو مشورہ دیتی ہے کہ آدھار کارڈ کے کھوجانے کی صورت میں وہ یو آئی ڈی اے کی سرکاری ویب سائٹ www. Uidia.gov.in پر جاکر مفت میں اپنا آدھار کارڈ ڈاون لوڈ کریں ۔ ڈاؤن لوڈ کیا ہواآدھار کارڈ اصلی ادھار لیٹر کی طرح ہی بالکل درست اور جائز ہے۔